58

آزادکشمیر میں کرونا ہسپتال اور دو ٹیسٹ لیبارٹیز ایک ہفتے میں کام شروع کر دیں گی، وینٹی لیٹر بھی خرید لیے گئے۔ وزیر صحت ڈاکٹر نجیب نقی

اسلام آباد(کاشف میر،سٹیٹ سے)آزادجموں کشمیر کے وزیر صحت و کرونا ہیلتھ ایمرجنسی کے ترجمان ڈاکٹر نجیب نقی خان نے سٹیٹ ویوز سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا ہے کہ آزادکشمیر حکومت نے کرونا وائرس سے بچاو کیلئے جو اقدامات کیے ہیں ان پر تمام عوام کو عمل کرنا ہو گا، حکومت سختی سے تمام اضلاع میں لاک ڈاون پر عمل کرا رہی ہے۔ ڈاکٹر نجیب نقی نے کہا کہ عوامی تعاون سے ہم اس وباء کا مقابلہ کر رہے ہیں اور حکومت اپنے تمام وسائل استعمال کر رہی ہے۔
ڈاکٹر نجیب نقی نے سٹیٹ ویوز کو بتایا کہ حکومت نے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کرتے ہوئے دارالحکومت مظفر آباد میں کرونا ہسپتال قائم کر لیا ہے جو ایک ہفتے میں فنگشنل ہوجائے گا، مظفرآباد اور میرپور میں ٹیسٹنگ لیبارٹیاں بھی ایک ہفتے میں قائم ہوجائیں گی جبکہ محکمہ صحت نے 6کرووڑ روپے کا ضروری سامان خرید لیا ہے جس میں ایک درجن کے قریب وینٹی لیٹزز کی خرید کر لی ہے جن کی جلد ہی سپلائی ہوجائے گی، ان وینٹی لیٹرز کو مظفرآباد، میرپور وغیرہ میں انسٹال کیا جائے گا جبکہ صحت کے عملے کیلئے پروٹیکشن کٹس ودیگر ضروری اشیاء بھی حاصل کی گئی ہیں۔
ڈاکٹر نجیب نقی خان نے بتایا کہ نیشنل ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی کے ساتھ مسلسل رابطے میں ہیں، این ڈی ایم اے کی طرف سے آزادکشمیر کو ماسک اور کٹس دی جارہی ہیں جبکہ حکومت پاکستان سے بھی مسلسل رابطے میں ہیں۔ وزیر اعظم آزادکشمیر راجہ فاروق حیدر خان کی سربراہی میں تمام حکومتی مشینری حرکت میں ہے، آزادکشمیر سے پاکستان آنے اور جانے پر پابندی ہے اور دیگر اضلاع میں نقل و حرکت پر بھی مکمل پابندی عائد ہے، پاکستان میں جو کشمیری موجود ہیں وہ آزادکشمیر کا رخ نہ کریں صرف مریضوں کو اوراشیاء خرونوش کی گاڑیوں کو آنے جانے کی محدود اجازت ہے۔
ڈاکٹر نجیب نقی نے کہا کہ حکومت نے یہ تمام اقدامات عوام کو کرونا وائرس سے بچانے کیلئے کیے ہیں اس لیے عوام مکمل تعاون کریں اور دو ہفتوں تک اپنے گھروں تک محدود رہیں، انہوں نے بتایا کہ صحت کی سہولیات اور دیگر اقدامات کیلئے وہ جلد ہی میرپور کا دورہ کریں گے اور اسکے بعد مظفرآباد سے ہو کر تمام آپریشنز کی نگرانی کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں