389

ترکوں‌کے ایثار بھلایا نہیں‌جا سکتا، صدر سردار مسعود

سلام آباد(پ ر) صدر سردار مسعود خان نے کہا ہے کہ پاکستان ، آزادکشمیر اور ترکی کے مابین جاری تعلیمی تعاون جلد علمی راہداری میں تبدیل ہو جائے گا۔ 2005کے زلزلے کے بعد ترک حکومت اور عوام نے ریسکیو، ریلیف اور متاثرہ علاقوں کی تعمیر نو میں جو کردار ادا کیا اسے کبھی بھلایا نہیں جا سکتا۔ آزاد جموں وکشمیر یونیورسٹی کا مظفرآباد کیمپس اور درجنوں سرکاری عمارتیں پاک۔ترک دوستی اور ترکی کے عوام کے ایثار، قربانی، انسان دوستی اور اسلامی بھائی چارے کی علامت کے طور پر ہمیشہ باقی رہیں گی۔

صدر سردار مسعود جمعرات کے روز کشمیر ہاؤس اسلام آباد میں ترکی کی حکومت کی جانب سے آزادکشمیر کے پانچ طلبہ و طالبات کو ترکی کے اعلیٰ تعلیمی اداروں میں وظائف کے ایوارڈز تقسیم کرنے کی تقریب سے خطاب کر رہے تھے ۔

تقریب سے آزاد جموں وکشمیر یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر کلیم عباسی، پاکستان میں ترکی کے سفیر احسان مصطفی یردوکل، ترکی کے بین الاقوامی تعاون و رابطہ ایجنسی کے کنٹری ہیڈ گوکھان امت ، آزاد جموں وکشمیر یونیورسٹی کے شعبہ لسانیت کے ڈائریکٹر نوید سرور اور ڈاکٹر رؤف جنجوعہ نے بھی خطاب کیا۔

جبکہ تقریب میں آزاد جموں وکشمیر کے سیکرٹری ہائیر ایجوکیشن زاہد حسین عباسی ، یونیورسٹی کے ڈین حضرات ، مختلف شعبہ جات کے سربراہان ، سکالرشپ حاصل کرنے والے طلبہ و طالبات اور ان کے والدین نے شرکت کی۔

صدر سردار مسعود خان تقریب سے اپنے خطاب میں ترکی کی حکومت کی طرف سے آزادکشمیر میں تعلیم کی ترقی میں گہری دلچسپی لینے اور ریاست کے طلبہ و طالبات کے لئے چین کی جامعات کے دروازے کھولنے پر تشکر کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان تعلیم اور دیگر شعبوں میں جاری تعاون دنیا کے دوسرے ممالک کے لئے مثال بنے گا۔

صدر کا مزید کہنا تھا کہ ترکی کی حکومت کے تعاون سے اب تک آزاد جموں وکشمیر سے تعلق رکھنے والے 32طلبہ کو سکالر شپس مہیا کئے گئے جو ترکی حکومت کی علم دوستی اور آزادکشمیر کے عوام کے ساتھ محبت کا بین ثبوت ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں