41

مقبوضہ کشمیر میں کورونا وائرس کا پہلا مریض دم توڑ گیا 65 سالہ شخص شوگر، بلڈ پریشر اور موٹاپے کا شکار ، سرینگر ہسپتال میں زیر علاج تھا

سرینگر (ویب ڈیسک )مقبوضہ کشمیر میں کورونا وائرس کے باعث پہلے ہلاکت ہو گئی۔ تفیصیلات کے مطابق پوری دنیا میں تباہی مچانے والا وائرس مقبوضہ کشمیر میں بھی پہنچ گیا ہے۔ جہاں اس سے متاثرہ افراد کی تعداد 8ہو گئی ہے۔ جبکہ ایک کشمیر ی جاں بحق ہو گیا ہے۔ کشمیری میڈیا کے مطابق 65 سالہ شخص کو کورونا وائرس کا مرض لاحق تھا ۔
اس کے ساتھ ساتھ سرینگر میں ہسپتال شخص شوگر، بلڈ پریشر اور موٹاپے کا شکار بھی تھا یہ بات بھی قابل غور رہے کہ مقبوضہ کشمیر کے مسلمان بھارتی مظالم کا شکار ہیں اورصحت سمیت تمام سہولیات سے بھی محروم ہیں ۔ اس حال میں کورونا وائرس کا کشمریوں کو متاثر کرنا انہتائی دردناک ثابت ہو سکتا ہے۔ دوسری جانب بھارتی فوج کا مقبوضہ کشمیر میں سرچ آپریش بھی جاری ہے جس میں بے گناہ مسلمان نوجوانوں کوظلم و بربریت کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

واضح رہے عالمی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق جہاں دنیا بھر میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد میں دگنی اسپیڈ سے اضافہ ہو رہا ہے وہیں دنیا بھر میں صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد میں سستی دیکھی جا رہی ہے اور 25 مارچ کی شام تک دنیا بھر میں صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد محض ایک لاکھ 12 ہزار کے قریب تھی۔ صحت یاب ہونے والے نصف سے زیادہ یعنی 70 ہزار سے زائد مریضوں کا تعلق چین سے تھا جبکہ باقی 40 ہزار مریض دنیا کے دیگر ممالک سے صحت یاب ہوئے۔
صحت یاب مریضوں کے حوالے سے چین کے بعد ایران دوسرے نمبر پر تھا جہاں 25 مارچ کی شام تک صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد 9 ہزار 625 تک جا پہنچی تھی اور وہاں پر کورونا کے مجموعی مریضوں کی تعداد 27 ہزار سے زائد ہو چکی تھی اور 2 ہزار سے زائد ہلاکتیں بھی ہوچکی تھیں۔ اٹلی کے بعد اسپین میں بھی کورونا وائرس کی ہلاکتیں چین سے زیادہ ہو چکی ہے۔ کورونا وائرس کے کیسز کے حوالے سے عالمی ادارہ صحت سمیت متعدد عالمی اداروں کی جانب سے بنائے گئے آن لائن میپ کے مطابق اسپین میں ہلاکتوں کی تعداد 3647 تک جا پہنچی ہے اور اٹلی میں ہلاکتوں کی تعداد 7503 ہو گئی ہے۔ اگر تقابلی جائزہ لیا جائے تو اس وقت چین میں مذکورہ دونوں ممالک سے کم 3287 ہلاکتوں کی تصدیق کی جا چکی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں