68

میڈیا نمائندگان سے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کشمنر پونچھ ڈویثرن مسعود الرحمان ڈی ائی جی

راولاکوٹ ( پی آئی ڈی)
04 نومبر 2020,,
میڈیا نمائندگان سے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کشمنر پونچھ ڈویثرن مسعود الرحمان ڈی ائی جی پونچھ ریجن سردار راشد نعیم کا کہنا تھا کہ کرونا وائرس فیز ٹو کا آغار ہو چکا ہے گزشتہ ایک ہفتے ضلع راولاکوٹ میں 6 اموات ہوئی ہیں جبکہ ضلع پونچھ روالاکوٹ میں ٹوٹل 21 اموات ہو چکی ہیں جبکہ ڈویثرن پونچھ میں اب تک کرونا وائرس سے اموات کی تعداد 49 ہو چکی ہے جس پر شدید تشویش ہے ان کا مزید کہنا تھا کہ کرونا وائرس کی دوسری لہر میں اگر عوام الناس نے احتیاط نہ برتی تو ہمیں مجبورا لاک ڈاون کی طرف جانا پڑے گا گزشتہ ایک ہفتے میں پونچھ راولاکوٹ میں کرونا وائرس سے 6 اموات ہوئی ہیں میڈیا نمائندگان سے بات کرتے ان کا کہنا تھا کہ ہم سب کی ذمہ داری ہے کہ بذریعہ سوشل میڈیا پرنٹ میڈیا ویب ٹی وی چینل لوگوں کو زیادہ سے زیادہ آگہی مہم دی جائے’ہم سکولز کالجز بند نہیں کر رہے اور نہ ہی لاک ڈاون کی طرف جا رہے لیکن اگر عوام نے تعاون نہ کیا اور حکومت اور انتظامیہ کی جانب سے جاری شدہ آیس اوپیز پر عمل نہ کیا تو مجبورا ہمیں مکمل لاک ڈاون کرنا پڑے گا ان کا مزید کہنا تھا کہ کروناکیسیز میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے جس پر شدید تشویش ہے چاروں اضلاع کے ڈی سی صاحبان کو ہدایت جاری کر دی ہیں کہ وہ اپنے اپنے اضلاع میں کرونا وائرس سے بچاؤ کے لئے حکومت کی جانب سے جاری شدہ ہیلتھ ایمرجنسی SOPsپر عملدرآمد کو یعقنی بنایا جائے ان کا مزید کہنا تھا کہ انتظامیہ،پولیس، سرکاری اداروں سمیت ہر شہری کی ذمہ داری ہے کہ وہ حکومت اور انتظامیہ کی جانب سے جاری شدہ ایس اوپیز پر سختی سے عمل کریں،اگر شہریوں کی جانب سے حکومت کی جانب سے جاری شدہ ایس او پیز پر عمل نہ کیا گیا تو کورونا وائرس کے پھیلاہو کو روکنے کے تمام تر حکومتی اقدامات ناکام ہونگے ان کا مزید کہنا تھا کہ لوگ خود احتیاط کریں بغیرماسک اورضروری کام کے شہروں اور رش والی جگہوں پر آنے جانے سے گریز کریں اور دوسروں کو بھی ماسک اور سوشل ڈسٹنس کا خیال رکھنے کی تلقین کریں ان کا مزید کہنا تھا کہ ہم جب تک سماجی فاصلوں کا خیال نہین رکھیں گے،اپنے گھروں اور آس پاس لوگوں میں کورونا وائرس سے بچاؤ کے سلسلہ میں حفاظتی اقدامات کی اگاہی کو یقینی نہیں بنائیں گے،کورونا وائرس کو شکست نہیں دے سکیں ان کا مزید کہنا تھا کہ،کورونا وائرس ایک بین الاقوامی وباء ہے جس سے اس کا علاج کرنے والے ڈاکٹرز اور ہیلتھ سے وابستہ افراد بھی نہیں بچ سکے، کرونا وائرس ہم سب پر اللہ تعالی کی جانب سے آزمائش ہے ہم سب کو انفرادی اور اجتماعی نمازے کا اہتمام کریں اور اللہ کے حضور دعا کریں کہ اللہ پاک ہم سب کو اس موذی مرض سے محفوظ رکھیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں