35

تہرے قتل کیس میں ملوث ملزم رضوان(رکشہ ڈرائیور )نے حوالات میں ہتھکڑی کو پھندہ بناکر تھانہ سٹی میں خود کشی کر لی

میرپور آزاد کشمیر (تلافی نیوز ) تفصیلات کے مطابق تھانہ سٹی میرپور میں پولیس کی حراست میں تہرے قتل کے الزام میں بند اس نوجوان نے مبینہ طور پر خودکشی کر لی ہے پولیس کے مطابق تینوں ملزمان الگ الگ رکھے ہیں ملزم کے چہرے پر بائیں طرف زخم کا ہلکا سا نشان صحت شدہ ہے بتایا یہ گیا ہے کہ ملزم اور اس کے ساتھی نے زیر تعمیر مدرسہ میں نیلم پری نامی خاتون کے ساتھ زیادتی کرتے ہوئے خلاف وضع فطری فعل کی کوشش کی خاتون کی طرف سے مزاحمت پر ہاتھ پائی ہوئی جس سے خاتون نے پتھر اٹھا کر ملزم کو مارا جس طیش میں آکر ملزم نوابی وار اینٹ سے کیا جو خاتون کے سر پر لگنے سے اس کی موت واقع ہو گئی اس قتل کو چھپانے کے لئے ملزمان کمسن بچی اور اس کی پھوپھی کو قتل کر دیا پہلی لاش ملنے سے اندھے قتل کا پرچہ پولیس کی مدعیت میں پرچہ درج ہوا اور پولیس نے ملزم کا اور اس کے ساتھیوں کا کھوج لگا کر ان کو گرفتار کر لیا گزشتہ روز تیسری لاش کی جگہ کا مجسٹریٹ صاحبان کی موجودگی میں تیسری لاش کی برآمدگی کی پولیس نے تینوں ملزمان نے الگ الگ مذکورہ جگہ کی سینکڑوں لوگوں کی موجودگی میں نشاندہی کی قتل ہونے والی لڑکیاں اور پھول جیسی بچی خانہ بدوش لوگوں کی ہیں مبینہ طور پر خودکشی کرنے والا ملزم لڑکیاں جبر گاؤں سے لے کر آیا پولیس تفتیش جاری ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں