95

آزاد کشمیر میں انٹرنیٹ کی غیرمعیاری سروس کے خلاف احتجاج کی تیاریاں!

آزاد کشمیر (نمائندہ خصوصی) آزاد کشمیر میں انٹرنیٹ کی غیر معیاری سروس کے خلاف لوگوں میں غم و غصہ کی لہر زور پکڑ رہی ہے اور گزشتہ چند دنوں سے سوشل میڈیا صارفین کی طرف سے سروس کی بہتری کیلئے احتجاج کیا جا رہا ہے۔

سوشل میڈیا صارفین مختلف ہیش ٹیگز اور پیغاماتی ویڈیوز کے ذریعے خطہ میں موبائیل فون کمپنیوں کی طرف سے مہیا کی جانے والی خراب سروس کے خلاف اپنے غم و غصے کا اظہار کر رہے ہیں۔

یاد رہے کہ کرونا وباء کی باعث آزاد کشمیر بھر کے تعلیمی ادارے مارچ 2020 سے مکمل طور پر بند ہیں جس کی وجہ سے بچوں کی تعلیم بری طرح سے متاثر ہے ، اسکول مالکان نے آن لائن کلاسز کی پیشکش کی لیکن جہاں کال ملانا ممکن نہ ہو وہاں آن لائن کلاسز کیسے ممکن ہونگی۔

اسی سلسلے میں منگل 23 جون کو شام 6 بجے سے 9 بجے تک سوشل میڈیا بشمول ٹویٹر پر بھی اپنا احتجاج ریکارڈ کروانے کی تیاریاں عروج پر ہیں۔

صارفین کا کہنا ہے کہ بارہا متعلقہ کمپنیوں اور ارباب اختیار سے گزارشات کے باوجود سروس میں بہتری نہ ہونے کے سبب اب احتجاجی راستہ اپنایا جا رہا ہے اور یہ احتجاج اہداف کے حصول تک جاری رہے گا۔

ہم نے اس احتجاج کو منظم کرنے والے چند صارفین سے بات کی ، ان کا کہنا تھا کہ برق رفتاری سے ترقی کرتے اس دور میں جب باقی دینا 5 جی پر منتقل ہو رہی ہے ، آزاد کشمیر میں 2 جی سروسز بھی مہیا نہیں کی جا رہی ہیں۔ ہم متعلقہ حکام سے بارہا گزارشات کر چکے ہیں لیکن کوئی دار رسی نہ ہو سکی مجبوراً ہمیں احتجاج کا راستہ اپنانا پڑ رہا ہے۔

واضح رہے کہ آزاد کشمیر میں اسوقت ایس سی او، موبیلنک جاز، یوفون، ٹیلی نار اور زانگ اپنی خدمات فراہم کر رہی ہیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں