20

ڈاکٹر خالد محمود امیر جماعت اسلامی آذاد جمعوں کشمیر گلگت بلتستان

ڈاکٹر خالد محمود امیر جماعت اسلامی آذاد جمعوں کشمیر گلگت بلتستان۔ آزاد پتن احتجاجی مظاہرین سے اظہار یکجیتی کرتے کی۔۔اس موقع پر ڈاکٹر خالد محمود صاحب دانش منور مرحوم کے ورثہ سے اظہار تعزیت کی۔اور چاہنہ ظالمانہ لیبر پالیسی کے خلاف مزمت کی۔ اس وقت لیبر حقوق تحریک کشمیر پاکستان انٹرنیشنل لا پر عملدرامد کے لیے سردار کبیر الطاف اور اس کی ٹیم کو زبر دست انداز میں خراج تحسین پیش کرتے ہوے کہا کہ ظلم بڑھتا ہے تو مٹ بھی جاتا ہے کبیر الطاگ اکیلا نہیں ہے ہم پوری قوت کے ساتھ اپ کی پشت پیچھے کھڑے ہیں حوصلہ بلند رکھیں۔ائندہ کے لیبر جائنٹ سپریم کونسل کے اجلاس میں شامل ہو کر اس تحرک کا حصہ بنوں گا۔ اور دنیا کو باور کروا دوں گا کہ ہم کمزور نہیں قانونی اور آئنی رو سے کشمیر کے مزدور کے حق کی بحالی کی بات کرتے ہیں جس پر کمپرومائز کرنا سوچ بھی نہیں سکتے۔آخر پہ انہوں نے ڈی سی او راولپنڈی سے بات کی کہ موقع پر فوری ٹیم بھج کو ہر امن اخلاقی اعتبار سے اس مسلہ کا حل نکالیں۔کبیر الطاف اور جابر ستی نے ہڑتال ختم کرنے کا اعلان کر کے مزاکراتی عمل سٹاٹ کر پر اعلان کیا ۔اور تمام احباب کا شکریہ بھی ادا کیا۔جبکہ ہڑتال اس وقت کی گی جب چاہنہ کی ٹیم مکمل بھاگ گی تھی۔ اور نہ کیمپ میجر انے چاہتے تھےحالات نے انھیں مزاکرات پہ مجبور کیا ہے۔ اور ٹال مٹول سے گزارہ کرتے رہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں