201

کراچی بائیکاٹ کرنے والوں کا بائیکاٹ کر دیا گیا

کراچی(ویب ڈیسک) کراچی بہتری کی طرف گامزن، بائیکاٹ کرنے والوں کا بائیکاٹ کر دیا گیا

پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی کے عوام نے الیکشن 2018ء کا بائیکاٹ کرنے والی قوتوں کابیان ہوا میں اڑادیا ۔

قومی اسمبلی کی21 اور صوبائی اسمبلی کی 44نشستوں پر ووٹ کے دوران پولنگ اسٹیشن پر عوام کی بڑی تعداد نے ووٹ ڈالے ۔

کراچی میں متحدہ قومی موومنٹ ،تحریک انصاف ،پیپلز پارٹی ، متحدہ مجلس عمل ، مسلم لیگ ن ،پاک سرزمین پارٹی سمیت تمام ہی جماعتوں نے اپنے امیدوار کھڑے کئے تھے۔

الیکشن مہم شہر بھر میں بھرپور انداز میں چلائی گئی ،اسی کا نتیجہ ہے کہ عوام کی بڑی قوت نے ووٹنگ کے عمل میں حصہ لیا ،این اے 245 کے ایک پولنگ اسٹیشن پر 100 میٹر طویل قطار بھی دیکھنے میںآئی ۔

ایک نجی نیوز ٹی وی کے مطابق گلشن اقبال کے مختلف بلاکس،دہلی کالونی ،پنجاب کالونی ، ڈیفنس ، پی ایس ایچ سوسائٹی،پی آئی بی کالونی، لیاقت آباد، شرف آباد، کلفٹن ،لائنز ایریا ،اردو بازار سمیت شہر کے مختلف علاقوں میں واقع پولنگ اسٹیشن پر صبح کے وقت رش کم رہا لیکن بعد میں بڑی تعداد میں لوگ ووٹ ڈالنے کےلئے آئے اور طویل قطاریں دیکھنے میں آئیں ۔

ووٹرز نے کہا کہ پہلے ہمارے لئے کام نہ کرنے والوں کو تبدیل کرکے نئے چہرے لانے کا وقت آگیا ہے،اب سوچ سمجھ کر اچھے امیدوار کو منتخب کریں گے۔

ایم کیو ایم کے ووٹرز نے کہا کہ پتنگ کا نشان ہماری پہچان ہے ،یہی لوگ ہمارے نمائندے ہیں،اسمبلی میں اپنی نمائندگی نہیں کھونے دیں گے، بائیکاٹ کا اعلان ہمیں پیچھے کردے گا۔

مختلف سیاسی جماعتوں کے کیمپوں میں موجود لوگوں نے بھی سیاسی عمل میں عوام کے بھرپور شرکت کی تصدیق کی اور کہا کہ بڑی تعداد میں لوگ ووٹ کی پرچی لینے آئے اور پولنگ اسٹیشن کی طرف گئے ہیں ، آج رات مثبت نتائج سامنے آئیں گے ،جس میں کراچی کے شہریوں کی جیت ہوگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں