149

دنیا بھر میں آباد نوے لاکھ سے زیادہ پاکستانی اور کشمیری ملک میں مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کر کے پاکستان اور آزادکشمیر کی معاشی ترقی کو چار چاند لگا سکتے ہیں۔سردار مسعود خان

اسلام آباد(تلافی نیوز )آزاد جموں وکشمیر کے صدر سردار مسعود خان نے کہا ہے کہ دنیا بھر میں آباد نوے لاکھ سے زیادہ پاکستانی اور کشمیری ملک میں مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کر کے پاکستان اور آزادکشمیر کی معاشی ترقی کو چار چاند لگا سکتے ہیں۔ آزادکشمیر میں سیاحت ، توانائی، معدنیات، بنیادی انفراسٹرکچر کی ترقی میں بیرونی سرمایہ کاری کے وسیع مواقع موجود ہیں۔ بیرونی سرمایہ کاروں کو ہر قسم کی مدد اور تعاون فراہم کرنے کے لئے آزادکشمیر کی حکومت پر عزم ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جناح کنونشن سنٹر اسلام آباد میں اورسیز پاکستانیز انوسٹمنٹ کنونشن کے زیر اہتمام ٹورازم اور کشمیر کے عنوان سے منعقدہ کانفرنس سے مہمان خصوصی کی حیثیت سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ کانفرنس سے وزیر اعظم پاکستا ن کے معاون خصوصی برائے اورسیز امور ذلفی بخاری، ایم کیو ایم پاکستان کے سینیٹر میاں عتیق، اورسیز ایسوسی ایشن کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر شفیق اکبر اور اورسیز پاکستانیز انوسٹمنٹ کنونشن کے چیئرمین غلام مصطفی نے بھی خطاب کیا۔ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے صدر سردار مسعود خان نے کہا کہ آزادکشمیر اپنے خوبصورت پہاڑوں، دلکش نظاروں اور معتدل موسم کی وجہ سے دنیا بھر کے سیاحوں کی توجہ کا مرکز بن سکتا ہے۔ آزاد علاقہ پرامن ہونے کے ساتھ ساتھ مہمان نوازی کی روایات اور قدیم کلچر کے باعث تفریحی سیاحت،ثقافتی سیاحت، مذہبی سیاحت اور مہم جوئی سیاحت کے لئے نہایت موزوں ہے۔ یہی وجہ ہے کہ گزشتہ چند سالوں میں آزادکشمیر کی سیاحت کے لئے آنے والوں کی تعداد ڈیڑھ ملین تک جا پہنچی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آزادکشمیر کی حکومت سیاحت کی ترقی اور فروغ کے لئے اس شعبے کو صنعت کا درجہ دینے پر غور کر رہی ہے جبکہ اس مقصد کے لئے تین سیاحتی راہداریوں کے ایک میگا منصوبے پر بھی جلد کام شروع ہو جائے گا جس کے تحت لائن آف کنٹرول سے دور ایسے متصل علاقوں کو ترقی دے کر سیاحوں کے لئے پر کشش بنایا جائے گا جہاں سیاح اپنے آپ کو مکمل طور پر محفوظ خیال کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ سیاحت کے علاوہ آزادکشمیر میں انفراسٹرکچر کی ترقی، بنکنگ، توانائی اور معدنیات کے شعبوں میں محفوظ اور منافع بخش سرمایہ کاری کی جا سکتی ہے جس کے لئے حکومت ہر قسم مدد فراہم کرنے کے لئے تیار ہے۔ سمندر پار پاکستانیوں اور کشمیریوں کو ملک کا قیمتی سرمایہ قرار دیتے ہوئے صدر سردار مسعود خان نے کہا کہ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی غالب تعداد اپنے پاؤں پر کھڑی ہے اور وہ چاہتے ہیں کہ ان کے وسائل ملک کی ترقی اور خوشحالی کے لئے استعمال ہوں۔ ضرورت اس بات کی سمندر پار پاکستانیوں کو یہ یقین دلایا جائے کہ ان کا سرمایہ پاکستان میں نہ صرف محفوظ رہے گا بلکہ ملک کی ترقی اور خوشحالی کے لئے بھی استعمال ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ آزادکشمیر سے تعلق رکھنے والے اڑہائی تین ملین لوگ بیرون ملک آباد جن میں سے بارہ لاکھ صرف برطانیہ میں آباد ہیں جو ملک سے بے پناہ محبت رکھتے ہیں اور ملک کی معاشی اور سماجی ترقی میں اپنا حصہ ڈالنا چاہتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ آزادکشمیر میں قائم بنک سیاحت کے شعبہ میں پندرہ فیصد سرمایہ کاری کرنے کے لئے تیار ہیں جبکہ اسٹیٹ بنک آف پاکستان بھی آزادکشمیر میں سیاحت کے فروغ کے لئے دست تعاون بڑہانے کے لئے تیار ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں